اصطلاحات

اصطلاح: وہ لفظ ہے جس کا کوئی خاص معنی کسی علم یا فن وغیرہ کے ماہرین نے یا کسی جماعت نے مقرر کر لیا ہو۔

حرکت

ایک زبر ایک زیر  اور ایک پیش کو حرکت کہتے ہیں

حرکات

زبر زیر اور پیش کے مجموعے کو حرکات یا حرکات ثلاثہ کہتے ہیں

متحرک

اور جس حرف پر کوئی حرکت ہو اُسے متحرک کہتے ہیں۔

تنوین

دو زبر دو زیرٍ اور دو پیش کو تنوین کہتے ہیں

مُنَوَّن

اور جس حرف پر تنوین ہو اُسے مُنَوَّن کہتے ہیں۔

فتحہ

زبر کو فتحہ کہتے ہیں خواہ ایک ہو یا دو

مفتوح

جس حرف پر فتحہ ہو اسے مفتوح کہتے ہیں۔

کسرہ

زیر کو کسرہ کہتے ہیں خواہ ایک ہو یا دو

مکسور

جس حرف پر کسرہ ہو مکسور اسے کہتے ہیں۔

ضمہ

پیش کو ضمہ کہتے ہیں خواہ ایک ہو یا دو

مضموم

جس حرف پر پیش ہو اس حروف کو مضموم کہتے ہیں۔

حروف تہجی / حروف ہجاء

الف سے یاء تک تمام حروف کو حُروفِ تہجی اور حُروفِ ہِجاء کہتے ہیں۔

حروف علت

الف، واؤ اور یا کو حروفِ علت کہتے ہیں۔

حروف صحیح

الف، واؤ ، اور یا کے علاؤہ بقیہ حروف کو حروفِ صحیح کہتے ہیں۔

سکون

اِس علامت (-ْ) کو سُکون اورجس

ساکن

جس حرف پرسکون ہواُسے ساکن کہتے ہیں۔

ہمزہ

جس الف پر کوئی حرکت یا سکون آ جائے اُسے ہمزہ کہتے ہیں۔ اور ہمزہ کی تین قسمیں ہیں

ہمزہ اصلیہ

جو ہمزہ زائد نہ ہو اُسے ہمزہ اَصلیہ کہتے ہیں

ہمزہ وصلیہ

جو ہمزہ زائدہ ہواور وصل یعنی ملانے کی صورت میں گرجاتا ہو اُسے ہمزہ وصلیہ کہتے ہیں

ہمزہ قطعیہ

جو ہمزہ زائدہ ہواور وصل یعنی ملانے کی صورت میں نہ گرتا ہو اُسے ہمزہ قطعیہ کہتے ہیں

حرف تعریف

الف لام (اَلْ) کوحرفِ تعریف کہتے ہیں

حرف تنکیر

جس تنوین کے ذریعہ سے کسی اسم کو نکرہ بنایا گیا ہو اس تنوین کو حرفِ تنکیر کہتے ہیں۔

حروفِ قمریہ

چودہ حروف (ح ق ک ا خ و ف ع ج ب غ م ہ ی) حروفِ قمریہ کہتے ہیں جس کا مجموعہ (حق کا خوف عجب غم ہے) ہے

حروفِ شمسیہ

اور حروفِ قمریہ کے علاوہ باقی حروف ہجاء کو حروفِ شمسیہ کہتے ہیں۔

حروفِ شمسیہ کا حکم

جب ایسے لفظ پراَلْ داخل ہو جس کا پہلاحرف شمسی ہو تو اَلْ کے لام کو حرفِ شمسی میں مدغم کر کے پڑھیں گے یعنی لام کا تلفظ نہیں کریں گے: اَلشَّمْسُ۔

Leave a Reply